حراستی مراکز ہو سکتا ہے نظریہ ضرورت کے تحت بنائے گئے ہوں، سپریم کورٹ

  |   Pakistan

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے ریمارکس دیے ہیں کہ حراستی مراکز ہو سکتا ہے نظریہ ضرورت کے تحت بنائے گئے ہوں جبکہ حکومت نے کہا ہے کہ لاپتہ افراد کی میڈیا میں آنے والی تمام شکایات غلط نہیں۔

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے پانچ رکنی لارجر بینچ نے فاٹا، پاٹا ایکٹ سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ اٹارنی جنرل نے پیش ہوکر بتایا کہ حراستی مراکز کے قواعد پاٹا میں صوبائی حکومت نے بنائے۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے پوچھا کہ آپ نے زیر حراست افراد کی فہرست سربمہر لفافے میں کیوں دی؟، قواعد میں تو زیر حراست افراد سے اہلخانہ کی ملاقات کا بھی ذکر ہے۔...

فوٹو - http://v.duta.us/Kc3wQQAA

یہاں پڑھیں مکمل خبر http://v.duta.us/j5r8RgAA

📲 Get Pakistan News on Whatsapp 💬