سندھ حکومت کی بدانتظامی؛ ٹھٹھہ میں بغیر چارٹر یونیورسٹی قائم، 80 کروڑ خرچ کردیئے

  |   Pakistan

کراچی: حکومت سندھ نے بدانتظامی اورمنصوبہ بندی کے فقدان کے گزشتہ تمام ریکارڈ توڑ دیےَ

سندھ حکومت کی جانب سے آئی بی اے ٹھٹھہ (انسٹی ٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن)کے نام سے ایک ایسے منصوبے کا انکشاف ہواہے جس کے لیے کسی قسم کی قانون سازی کی گئی اسمبلی سے ایکٹ منظور کیا گیا نہ ہی سرکاری سطح پر کوئی قانونی دستاویزات موجودہیں تاہم کسی قانون سازی کے بغیر تقریباً 800 ملین روپے کی خطیررقم خرچ کرکے آئی بی اے ٹھٹھہ کی عمارت بنادی گئی ہے۔

یونیورسٹی کے قیام اورآغاز کے بغیراس کے لیے کئی کروڑروپے کی گاڑیاں بھی خرید لی گئی ہیں جس میں طلبا کے لیے 2بسیں بھی شامل ہیں 4سال سے بغیرکسی قانون سازی کے یہ منصوبہ جاری ہے تاہم ٹھٹھہ سمیت سندھ کے طلبا آئی بی اے ٹھٹھہ کے قیام اوراس میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے کسی امکان سے بھی لاعلم ہیں جبکہ کم از کم 1500طلبا کے لیے 5مختلف شعبہ جات اورطلبا کا ہاسٹل شامل کرتے ہوئے عمارت کو ڈیزائن کیاگیاہے تاہم 4سال بعد بھی عمارت میں کوئی طالب علم ہے اورنہ ہی شعبہ جات قائم ہو سکے ہیں۔...

فوٹو - http://v.duta.us/quXjQQAA

یہاں پڑھیں مکمل خبر http://v.duta.us/PfSpFgAA

📲 Get Pakistan News on Whatsapp 💬