’’پیغام پاکستان‘‘ کو قانونی شکل دی جائے، علما

  |   Pakistan

لاہور: نیشنل ایکشن پلان اور ’’پیغام پاکستان‘‘ سے ملک میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہوئی، ’’پیغام پاکستان‘‘ تمام مسالک کے ہزاروں جید علما کا متفقہ فتویٰ ہے جسے قانونی شکل دینے کی ضرورت ہے۔

توہین آمیز مواد لکھنے اور ایسی تقاریر کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی یقینی بنایا جائے۔ اس مرتبہ ماضی کی نسبت حالات بہتر ہیں تاہم حکومت ہمیشہ محرم الحرام جیسے حساس ایام پرہی حرکت میں آتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار مختلف مسالک کے علماء نے ’’محرم الحرام میں امن و امان کی صورتحال‘‘ کے حوالے سے منعقدہ ’’ایکسپریس فورم‘‘ میں کیا۔

چیئرمین پاکستان علما کونسل علامہ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ اگر ضابطہ اخلاق پر مکمل عملدرآمد کرایا جائے تو پاکستان کے اندر فرقہ وارانہ تشدد، انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خاتمے میں بھرپور مدد مل سکتی ہے۔ ہمارا دشمن چالاک بھی ہے اور عیار بھی۔ وطن عزیز میں فرقہ وارانہ فسادات کو ہوا دے کر انتشار پھیلانا سب سے آسان ہدف ہے لیکن ہمیں دشمن پر کھلی آنکھ سے نظر رکھنا ہوگی۔ دشمن شرارت کر سکتا ہے لہٰذا سب کو اپنی ذمہ داری ادا کرنا ہوگی۔ عوام کو بھی چاہیے کہ چیکنگ و دیگر مراحل میں سکیورٹی اہلکاروں کے ساتھ تعاون کریں۔ افواہوں اور بے بنیاد خبروں کو نہ پھیلایا جائے اور اس کی مکمل تحقیق کرلی جائے تاکہ انتشار پیدا نہ ہو۔...

فوٹو - http://v.duta.us/XzQpbwAA

یہاں پڑھیں مکمل خبر http://v.duta.us/I7obYwAA

📲 Get Pakistan News on Whatsapp 💬