کراچی کے انفرا اسٹرکچر کیلیے لانگ ٹرم قرضہ لینا پڑا تو لیں گے، خسرو بختیار

  |   Pakistan

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی خسرو بختیار نے کہا ہے کہ کراچی کے انفرااسٹرکچر کیلیے لانگ ٹرم قرضہ لینا پڑا تو لیں گے، کراچی میں پانی اور سیوریج کے لیے 5 سال میں 300 ارب روپے کی ضرورت ہے۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے منصوبہ بندی کا اجلاس آغا شاہ زیب درانی کی زیر صدارت ہوا۔ اجلاس میں وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی نے بتایا کہ کراچی میں کے فور کیلیے نیسپاک نے 2ماہ کا وقت لیا ہے۔ کے فور پر نیسپاک کی ٹیکنیکل کمیٹی کی رپورٹ جلد آ جائے گی۔ کے فور میں اب پاور پلانٹ بھی شامل کرنا پڑے گا۔ پانی کو بیچ کر ہی خرچ برداشت کیا جا سکتا ہے، ورنہ منصوبے مستحکم نہیں ہوتے۔...

فوٹو - http://v.duta.us/XWo91QAA

یہاں پڑھیں مکمل خبر http://v.duta.us/nZORTwAA

📲 Get Pakistan News on Whatsapp 💬